سابق صدر پاکستان اور پاکستان پیپلزپارٹی پارلیمنٹیرینز کے صدر آصف علی زرداری نے سیاسی کارکنوں پر دہشتگردی کے ایکٹ کے تحت مقدمات داخل کرنے کی سخت الفاظ میں مزمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک کا آئین جمہوری آزادی کی ضمانت دیتا ہے، اظہار رائے کی آزادی پر قدغن قابل قبول نہیں۔ آصف علی زرداری نے کہا کہ سیاسی کارکن جمہوریت کی طاقت ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی کی حکومت میں کوئی سیاسی قیدی نہیں تھا۔ انہوں نے کہا کہ گالی اور گولی کی سیاست جمہوریت کی دشمن ہے۔ جن کی زبان پر گالی ہے وہ عوام کو کیا دیں گے۔ الیکشن کمیشن کا یہ فرض ہے کہ وہ تمام سیاسی پارٹیوں کو انتخابات میں سازگار ماحول فراہم کرے۔ آصف علی زرداری نے کہا کہ بلاول بھٹو کو سکیورٹی خدشات ضرور ہیں مگر وہ عوام سے دور نہیں رہ سکتے۔ انہوں نے دادو میں پیپلزپارٹی کے امیدوار برائے قومی اسمبلی کے جلوس پر فائرنگ کی مزمت کرتے ہوئے حکومت سندھ سے کہا ہے کہ وہ ملزمان کو گرفتار کرے۔ آصف علی زرداری نے پارٹی کے زخمی کارکنوں کی جلد صحتیابی کی دعا کرتے ہوئے پارٹی کارکنوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ صبر وتحمل سے کام لیں اور پرامن طریقے سے انتخابی مہم کو رواں دواں رکھیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here