کراچی سے سرگودھا آنے والی ملت ایکسپریس کی بوگیاں پٹری سے اتر کر ڈاؤن ٹریک پر جا گریں جو راولپنڈی سے آنے والی سرسید ایکسپریس سے ٹکرا گئیں۔

0
180

کراچی سے سرگودھا آنے والی ملت ایکسپریس کی بوگیاں پٹری سے اتر کر ڈاؤن ٹریک پر جا گریں جو راولپنڈی سے آنے والی سرسید ایکسپریس سے ٹکرا گئیں۔

ریلوے نے مسافروں کی سہولت کے لیے کراچی، سکھر، فیصل آباد اور راولپنڈی میں ہیلپ سینٹر قائم کردیئے ہیں

ٹرین حادثہ ریتی اور ڈھرکی کے درمیان ریلوےاسٹیشن ریتی کے قریب پیش آیا.

زخمیوں کو فوری طبی امداد کے لئے تعلقہ ہسپتال روھڑی،پنوعاقل اور سول ہسپتال سکھر منتقل کیا گیاہے

زیادہ تر زخمیوں کو ابتدائی طبی امداد کے بعد فارغ کردیا گیا ۔

ٹریک بحال ہوتے ہی ٹرینوں کو منزل مقصود کی طرف روانہ کر دیا جائے گا ۔

گھوٹکی حادثے پر وفاقی وزیر ریلوے محمد اعظم خان سواتی کا نوٹس، انکوائری کا حکم 24 گھنٹے کے اندر ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ مکمل کی جائے۔
حادثے کی معلومات کے لیے ان نمبروں پر رابطہ کرکے معلومات حاصل کی جاسکتی ہیں۔ فیصل آباد 041-9200488، اے او فیصل آباد0333-4805996، راولپنڈی 051-9270834، کراچی کینٹ عیسیٰ زرداری 0331-2706334، خرم 0300-3754200، روہڑی اور سکھر 071-5813433، 071-9310087 ترجمان ریلوے
٭ اطلاعات کے مطابق حادثے کے نتیجے میں ابھی تک 30 مسافر جاں بحق ہوچکے ہیں۔

گھوٹکی میں ٹرین حادثے اور اس میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر دل انتہائی رنجیدہ ہے۔وفاقی وزیر ریلوے اعظم خان سواتی
اللہ تعالی مرحومین کے درجات بلند فرمائے اور لواحقین کو صبر جمیل عطا کرے۔ وزیر ریلوے
وزیر اعظم عمران خان کی ہدایت پر جا ئے وقو عہ پر پہنچ کر خود مانٹرنگ کر ونگا۔ وزیر ریلوے
میں زخمیوں کی جلد صحتیابی کے لیے دعا گو ہوں۔ وزیر ریلوے
آرمی انجینئرز کی خصوصی ٹیم ریلیف آپریشن کو مزید تیز کریگی،وزیر ریلوے
ریلوے اور آرمی جوان کی مدد سے حادثہ ریلیف اور ریسکیو آپریشن شروع کر دیا .

تمام ادارے ریسکیو آپریشن میں مصروف عمل ہیں۔

زخمیوں کو نزدیکی ہسپتالوں میں منتقل کیا جا چکا ہے۔

پاک فوج کے جوان، رینجرز، ضلعی انتظامیہ، ریسکیو 1122 اور سندھ پولیس ریسکیو آپریشن میں مصروف عمل ہیں۔

ضروری مشینری اور آلات کی مدد سے بوگیوں میں پھنسے مسافروں کے ریسکیو کا عمل پایہ تکمیل کے قریب ہے۔
ٹریک سے ریلیف ٹرین اور کرین کے ذریعے ملبہ ہٹانے کا کام جاری۔
۔
آرمی کے دو ہیلی کاپٹر بھی ریسکیو آپریشن میں شامل۔

پاکستان ائیرفورس نے بھی ریسکیو اور ایمرجنسی کے لیے دو جہاز چکلالہ اور پی اے ایف بیس فیصل کراچی پر تیار کر دیے ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here