چین کے نائب صدر وانگ کشان وفد کے ہمراہ، تین روزہ دورے پر پاکستان پہنچ گئے

0
940

چین کے نائب صدر وانگ کشان وفد کے ہمراہ، تین روزہ دورے پر پاکستان پہنچ گئے

نور خان ہوائی اڈے پر وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی اور وزیر منصوبہ بندی مخدوم خسرو بختیار نے معزز مہمانوں کا خیر مقدم کیا

چین کے نائب صدر اپنے دورہ ء پاکستان کے دوران ، صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی اور وزیراعظم عمران خان سے الگ الگ ملاقات کریں گے۔

پاکستان اور چین کے مابین مختلف شعبوں میں دوطرفہ تعاون کو فروغ دینے کے لئے مفاہمت کی یادداشتوں اور معاہدوں پر دستخط ہونگے ۔

چین کے نائب صدر کا یہ دورہ پاکستان اور چین کے درمیان دیرینہ اور وقت کی ہر آزمائش پر پورا اترنے والے دوستانہ اور گہرے تعلقات کا مظہر ہے۔

چین کے نائب صدر کے اس دورے سے موجودہ دو طرفہ تعلقات مزید مستحکم ہوں گے اور مختلف شعبوں میں دونوں ملکوں کے درمیان بڑھتے ہوئے کثیر جہتی تعاون کو مزید تقویت ملے گی۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا چین کے نائب صدر جناب وانگ کشان کے اعزاز میں منعقدہ ’سلک روڈ کے دوست فورم‘ سے خطاب

چین کے نائب صدر جناب وانگ کشان اور ان کے وفد کو پاکستان آمد پر خوش آمدید کہتا ہوں
پاکستانی عوام کے ساتھ چین کی دہائیوں پر محیط گہری دوستی و حمایت اور پاک چین دوستی پر کامل یقین پر خراج تحسین پیش کرتا ہوں

چین میں جناب وانگ کشان کا ایک ممتاز تاریخ دان، بے مثال معیشت دان اور ایک عظیم رہنما کے طورپر احترام کیاجاتا ہے

چین پاکستان تزویراتی تعاون وشراکت داری میں آپ کی مخلصانہ کاوشیں دونوں ممالک کے لئے نہایت قابل قدر ہیں

چین پاکستان دوستی کے رشتے کو مزید تقویت دینے میں آپ کی بصیرت افروز کوششوں کو سراہتا ہوں

آپ کی ہماری قیادت سے ملاقاتوں میں ہونے والی گفتگو سے دونوں ممالک کی عظیم دوستی کو مزید فروغ ملے گا

عوامی جمہوریہ چین کے قیام کی ستر سالہ سالگرہ پر آپ کو دل کی گہرائیوں سے مبارک باد پیش کرتے ہیں

صدر شی جن پنگ کی قیادت میں دوسرے بیلٹ اینڈ روڈ فورم کے بیجنگ میں کامیاب انعقاد پر بھی ہدیہ تبریک پیش کرتے ہیں

پاکستان اور چین دو انتہائی بااعتماد دوست اور شراکت دار ہیں

دونوں ممالک کی دوستی کی بنیاد مشترکہ قدروں، تجربات، اہداف، امن وبھائی چارے اور خوشحالی کی مشترکہ خواہش پر استوار ہے

پاکستان اور چین، نئے دور کے آغاز، مستقبل میں مشترکہ خوشحال ومضبوط دنیا کے لئے اجتماعی مذاکرے، عملی تعاون کو پختہ کرنے اور مل کرکام کرنے پر یقین رکھتے ہیں

سینیٹر مشاہدحسین سید کی کاوشوں کا اعتراف کرتا ہوں، وہ چین کے پرانے دوست ہیں

سینیٹر مشاہد حسین سید کو تقریب کے انعقادپرمبارک دیتا ہوں، وہ دونوں ممالک کے عوام، سیاسی جماعتوں کو قریب لائے
پاک چائنا انسٹی ٹیوٹ نے عوام کے لئے پلیٹ فارم کا اجراءکیا ہے جس میں دونوں طرف کے متعلقہ فریقین شرکت کرسکیں گے

دونوں جانب کے مختلف شعبہ ہائے زندگی کے افراد کی ملنساری میں اضافے سے بیلٹ اینڈ روڈ پر ہم آہنگی بڑھے گی

مشاہد حسین سید نے مارچ 2019ءمیں سی پیک سیاسی جماعتوں کی مشترکہ مشاورت کے طریقہ کار کی تخلیق میں بھی اہم کردار ادا کیا ہے
اس ضمن میں چین کی کمیونسٹ پارتی کے انٹرنیشنل ڈیپارٹمنٹ کے کردار کو بھی سراہتا ہوں

دونوں کی کاوش کی بناءپر ہی مارچ 2019ءمیں ’بیجنگ اعلامیہ‘ کی منظوری ممکن ہوئی تھی

سی پیک نے دو طرفہ تعلقات کو مضبوط بنانے، معاشی وسماجی ترقی کو نئی بلندیوں سے ہمکنار کرنے میں مدد دی ہے

سی پیک دوسرے مرحلے میں داخل ہوگیا ہے جس میں صنعتی، سماجی ومعاشی تعاون پر توجہ مرکوز کی گئی ہے
یہ مرحلہ مقامی آبادیوں کے لئے ترقی وخوشحالی لائے گا،

ترجیحی خطوں کے ساتھ پاکستان کی ترقی میں اضافہ کی راہ ہموار ہوگی

نومبر 2018 اور اپریل 2019ءمیں وزیراعظم کے دورہ اور دوسرے بیلٹ اینڈ روڈ فورم میں شرکت سے چین اور پاکستان میں اشتراک عمل مزید مضبوط ہوا ہے

ہماری حکومت کی اول دن سے بنیادی توجہ غربت کے خاتمے، صنعتی ترقی، تعلیم، ٹیکنالوجی اور سائنسی تخلیق اور زرعی ترقی پر مرکوز ہے

انسداد بدعنوانی کے لئے ہماری کوششیں بھی رنگ لارہی ہیں ، عوام کی معاشی وسماجی بہتری کے لئے کوششوں پر توجہ دی جارہی ہے

دونوں ممالک کی مشترکہ سوچ ہے کہ ہم اپنے عوام سمیت تمام بنی نوع انسان کی بہتری چاہتے ہیں

اپنی صلاحیتوں کو مشترکہ طورپر استعمال میں لاکر ترقی کا ہدف حاصل کرنا چاہتے ہیں

پاکستان اور چین کی تزویراتی شراکت داری وتعاون کو مزید تقویت دیں گے تاکہ چین، پاکستان اور دنیا کے عوام تک ثمرات پہنچیں

چین اور پاکستان 2019ءکو باہمی تعلقات کے سال کے طورپر منا رہے ہیں، عوام کی سطح پر مراسم کو ایک نئے درجے تک بڑھانے کی امید ہے

نائب صدر چین کے دورہ پاکستان سے دونوں ممالک کے تعلقات مزید پختہ ہوں گے اور فروغ پائیں گے

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے نائب صدر چین کا پاکستان کو دورہ کرنے پر خصوصی شکریہ ادا کیا

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here